’’یوپی الیکشن، مذہب کے نام پر انتخابات کی تیاریاں ملک کو بربادی کی طرف لے جانے کا شاخسانہ‘‘ اکھلیش کو دُریودھن اور بی جے پی لیڈر کو ہنومان بول کر تشہیر، ملک کی دستوری آزادی کا غلط استعمال ۔ آل انڈیا امامس کونسل

۲۹؍ جون، ۲۰۱۶، مطابق: ۲۳؍ رمضان المبارک ۱۴۳۷ھ ؁، شاہین باغ ، نئی دہلی۔
’’یوپی الیکشن، مذہب کے نام پر انتخابات کی تیاریاں ملک کو بربادی کی طرف لے جانے کا شاخسانہ‘‘
اکھلیش کو دُریودھن اور بی جے پی لیڈر کو ہنومان بول کر تشہیر، ملک کی دستوری آزادی کا غلط استعمال ۔ آل انڈیا امامس کونسل

’’یوپی الیکشن میں ووٹ بٹورنے کے لیے فرقہ پرست طاقتیں اپنی پوری کوششوں کے ساتھ میدان میں ابھی سے اُتر چکی ہیں۔ کسی بھی حال میں الیکشن جیتنے کے لیے فسطائی عناصر ’’انتخابات‘‘ کو مذہبی رنگ دینے کی کوشش میں ایڑی چوٹی کا زور صرف کر رہے ہیں۔ فساد اور مذہبی تعصب کی بنیاد پر ووٹ حاصل کرنے کی سیاست کو گرم کرنے کے لیے اکھلیش کو ’’دُریودھن‘‘ اور بی جے پی لیڈر کو ’’ہنومان‘‘کا نام دینا الیکشن کو مذہبی رُخ دینے کی تیاری ہے۔سیاسی گلیاریوں میں اس طرح کی قلابازیاں بالخصوص ہندستانی سیاست میں ملک کے مفاد کے خلاف ہے۔ عوام کے ذہن کو مذہبی عصبیت کے نام پر منتشر کرنا مستقبل کے لیے بہت ہی خطرناک ہے‘‘۔ان باتوں کا اظہار آل انڈیاامامس کونسل کے قومی صدر جناب مولانا عثمان بیگ رشادی نے ایک پریس نوٹ میں کیا ۔
انھوں نے کہاکہ : ’’ملک اور صوبہ کی ترقی بلاتفریق مذہب و علاقہ کسانوں، غریبوں اور مزدوروں کی ترقی کے ساتھ وابستہ ہے۔ جہاں صرف اونچی ذات کے مفاد پرست لوگ سیاسی کرسیوں پر مذہبی چشمہ لگا کر بیٹھے ہوں وہاں عوام اور ملک کی ترقی نہیں ہو سکتی ہے‘‘۔
مولانا رشادی نے مزید کہا کہ : ’’یوپی الیکشن کو فسطائی عناصر کے مذہبی اور سامراجی عصبیت کا بھینٹ چڑھنے نہیں دیا جائے گا۔ جو بھی مذہبی منافرت پھیلانے اور علاقائی تقسیم کی بنیاد پر انتخابات کی تشہیر کریں گے انھیں سلاخوں کے پیچھے ڈالا جائے گا‘‘۔
کونسل کے قومی ناظم عمومی مفتی حنیف احرارؔ سوپولوی نے کہا کہ : ’’مذہب کو الیکشن کا مدعا بنانا یہاں کے دستور کے خلاف ہے۔ اور فساد کا ماحول بنا کر عوام میں خوف و ہراس پیدا کر کے الیکشن جیتنے کی کوشش کرنا مجرمانہ حرکت اور غنڈہ گردی ہے؛ اس لیے یوپی گورنر سے درخواست ہے کہ وہ ان چیزوں کا خصوصی توجہ دیں‘‘۔
قومی جنرل سکریٹری نے کہا کہ : ’’ابھی سے ہی یوپی میں جس طرح کا ماحول بنایا جا رہا ہے، اس سے صاف ظاہر ہے کہ ہونے والے یوپی الیکشن میں طبقہ واریت، فرقہ واریت ، مذہبی منافرت اور مخصوص ذہنیت کو مدعا بنایا جائے گا۔ اگر ایسا ہوا تو یہ ملک کے لیے بالکل بھی اچھا نہیں ہوگا‘‘۔
انھوں نے کہاکہ : ’’ آل انڈیا امامس کونسل مطالبہ کرتی ہے کہ :’’ملک بھر بالخصوص یوپی میں قومی یکجہتی اور امن و شانتی کا ماحول بنائے رکھنے اور تمام طبقات اور مذاہب کے ماننے والوں کو بے خوف آزادانہ ماحول فراہم کرنے کے لیے حکومت اقدامات کرے‘‘ ۔
ایم ، ایچ ، احرارؔ سوپولوی
قومی ترجمان : آل انڈیا امامس کونسل

 

Location


DELHI
F-20, III Floor, Shaheen Bagh, Jamia Nagar, Okhla, New Delhi 110025, India

 

Contact

Give us a call at

+91 98809 80310

+91 99607 19466

Email us at allindiaimamscouncil@gmail.com

 

Newsletters

Subscribe and get the latest updates, news, and more...